News

صاف پانی کیس: نیب نے شہبازشریف کو حراست میں لے لیا

لاہور: قومی احتساب بیورو( نیب) نے صاف پانی کیس میں مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف کو حراست میں لے لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق نیب نے آج شہباز شریف کو صاف پانی کیس میں تفتیش کے لیے طلب کیا تھا، شہباز شریف تفتیش کے لیے آئے تو ان سے پوچھ گچھ کے بعد شہباز شریف کو حراست میں لیا گیا۔

بتایا گیا ہے کہ شہبازشریف کوصاف پانی اسکینڈل میں غیرقانونی ٹھیکےدینےپرگرفتارکیاگیا ہے ، اس وقت شہباز شریف وزیراعلیٰ پنجاب تھے ۔

اے آروائی نیوز کے نمائندے صابر شاکر کے مطابق یہ معاملہ انتخابات سے پہلے سے چل رہاہے ، الیکشن کے سبب معاملات کو ملتوی کردیا گیا تھا ۔ انہوں نے یہ بھی بتایا کہ شہبازشریف جب بھی پیشی پر آتے تھے ان کا رویہ انتہائی جارحانہ ہوا کرتا تھا۔

 شہباز شریف کی گاڑی واپس بھجوادی گئی ہے جبکہ پولیس کی بھاری نفری بھی نیب کے دفتر پہنچ گئی ہے۔ شہباز شریف کے اپوزیشن لیڈر ہونے کے سبب اسپیکر قومی اسمبلی کو اطلاع دینا ضروری ہے، جس کے لیے رابطہ کیا جارہا ہے۔

خیال رہے کہ نیب لاہور صاف پانی کمپنی کرپشن کیس میں کروڑوں روپے کی مالی بے ضابطگیوں کے الزام میں تفتیش کر رہی تھی۔ نیب کے مطابق ملزمان کی ملی بھگت سے حکومتی خزانے کو کروڑوں روپے کا نقصان پہنچا اور ملزمان نے بہاولپور ریجن میں انتہائی مہنگے داموں 116 واٹرفلٹریشن پلانٹس نصب کیے۔

Tags
Show More

Related Articles

Close

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker
Bitnami